Home / امارات / دُبئی: پاکستانی نے وطن واپس نہ جانے کی خاطربھارتی مزدور کی جان لے لی
Image processed by uaeurdu.com

دُبئی: پاکستانی نے وطن واپس نہ جانے کی خاطربھارتی مزدور کی جان لے لی

دُبئی میں مقیم ایک پاکستانی مزدور نے صرف اس بناءپر اپنے ساتھی مزدور کی جان لے لی تاکہ وہ وطن واپس جانے کی بجائے جیل چلا جائے ۔ پولیس نے 27 سالہ پاکستانی مزدور کو گرفتار کر لیا۔ عدالت میں مقدمے کی سماعت کے دوران استغاثہ کی جانب سے بتایا گیا کہ ملزم نے بھارت سے تعلق رکھنے والے اپنے ساتھی ملازم کو ایک کپڑے کی مدد سے اُس کا گلہ گھونٹ کر ہلاک کیا۔
یہ واقعہ رواں سال 26 فروری کو پیش آیا جس کی رپورٹ الرشیدیہ پولیس اسٹیشن میں درج کروائی گئی۔ ایک پولیس اہلکار نے عدالت کو بتایا کہ یہ واقعہ ناد الحمر میں واقع ایک زیر تعمیر بلڈنگ میں دوپہر کے وقت پیش آیا۔ پولیس کو اطلاع دی گئی کہ کچھ غیر مُلکی مزدوروں کے درمیان جھگڑا ہو گیا جس کے دوران زخمی ہونے والا ایک ورکر ہسپتال لے جایا گیا، جہاں ڈاکٹروں نے اُس کی موت کا اعلان کر دیا ہے۔

پولیس کو دیگر مزدوروں نے بتایا کہ اُنہوں نے ملزم کو ایک کپڑے کی مدد سے متوفی کا گلہ گھونٹتے ہوئے دیکھا ہے۔ جب ملزم سے تفتیش کی گئی تو اُس نے اپنے جُرم کا اقرار کرتے ہوئے بتایا کہ اُس کا مرنے والے سے کوئی جھگڑا نہیں تھا۔ اُس نے جب بھارتی مزدور کو بریک ٹائم کے وقت سوتے ہوئے دیکھا تو اُسے قتل کرنے کا ارادہ بنا لیا۔ جب ملزم سے پُوچھا گیا کہ اُس نے یہ حرکت کیوں کی تو اُس نے بتایا کہ اُس کے ایک ساتھی نے اُس کی برہنہ حالت میں تصویریں بھائی کو روانہ کر دی تھیں۔
جنہیں دیکھ کر بھائی آگ بگولہ ہو گیا تھا اور اُسے دھمکی دی تھی کہ جب وہ واپس آئے گا تو وہ اُسے قتل کر دے گا۔ وہ اپنی جان کے خوف سے وطن واپس نہیں جانا چاہتا تھا اور کوئی نہ کوئی ایسا جُرم کرنا چاہتا تھا جس کے باعث وہ پکڑا جائے اور امارات میں ہی رہ جائے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے