Home / پاکستان / ہدف کے دفاع میں پاکستان کو اپنی تاریخ کی سب سے بدترین شکست، انگلینڈ نے باآسانی فتح حاصل کر لی

ہدف کے دفاع میں پاکستان کو اپنی تاریخ کی سب سے بدترین شکست، انگلینڈ نے باآسانی فتح حاصل کر لی

برسٹول (یواےای اردو) 358 رنز بھی کم پڑ گئے، ہدف کے دفاع میں پاکستان کو اپنی تاریخ کی سب سے بدترین شکست، انگلینڈ نے باآسانی فتح حاصل کر لی، برسٹو کی دھواں دار اور شاندار سینچری کے باعث انگلینڈ نے 359 رنز کا ہدف باآسانی حاصل کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان کیلئے انگلینڈ کے خلاف سیریز کے تیسرے ایک روزہ میچ میں 358 رنز بھی کم پڑ گئے۔
انگلینڈ کے بلے بازوں کی جانب سے 359 رنز کے ہدف کے تعاقب میں پاکستانی باولرز کا بھرکس نکال دیا گیا۔ پاکستان کو ہدف کے دفاع میں سب سے بدترین شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ انگلینڈ نے 359 رنز کا ہدف 45 ویں اوور میں باآسانی 4 وکٹوں کے نقصان پر پورا کر لیا۔ انگلینڈ کی جانب سے بیرسٹو نے شاندار سینچری اسکور کرکے اپنی ٹیم کی فتح میں کلیدی کرداد ادا کیا۔

پاکستان کی جانب سے فہیم اشرف، جنید خان اور عماد وسیم نے 1، 1 وکٹ حاصل کی۔ اس سے قبل پانچ ون ڈے میچز کی سیریز کے تیسرے مقابلے میں پاکستان نے انگلینڈ کو جیت کے لیے 359رنز کا ہدف دیا ۔برسٹول میں کھیلے گئے میچ میں گرین شرٹس کے اوپنر پچھلے میچ کے مقابلے میں اس بار اچھا آغاز نہ دے سکے اور جلد ہی پہلی وکٹ گنوادی۔دوسرے ون ڈے میں شاندار سنچری بنانے والے فخرزمان آج لمبی اننگز نہ کھیل سکے اور کرس ووکس کو وکٹ دے کر پویلین لوٹ گئے، وہ صرف 2 رنز ہی بناسکے۔
بابر اعظم بھی صرف 15 رنز بناکر ووکس کی گیند پر کلین بولڈ ہوگئے۔دو وکٹیں جلد گرنے کے بعد امام الحق اور حارث سہیل نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کی اور وکٹ گرنے کے سلسلے کو روکنے کے ساتھ ساتھ 68رنز کی شراکت داری قائم کی جس کے بعد حارث سہیل 41رنز بنا کر غیر ذمہ درانہ طریقے سے رن آﺅٹ ہوئے ،کپتان سرفراز احمد پانچویں نمبر پر کھیلنے آئے اور 27 رنز بناکر پویلین لوٹے، اس کے بعد آصف علی اور امام الحق نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کی اور سکور میں تیزی سے اضافہ کیا۔
امام الحق نے شاندار بیٹنگ کرتے ہوئے اپنے کیرئیر کی چھٹی سنچری بنائی، انہوں نے اپنی اننگز میں ایک چھکا اور 14 چوکے لگائے جب کہ آصف علی نے بھی 40 گیندوں پر نصف سنچری سکور کی،آصف علی52رنز بنا کر آﺅٹ ہوئے جبکہ امام الحق 151رنز کی عمدہ باری کھیلنے کے بعد پوویلین لوٹے، فہیم اشرف13رنز بنا کر کیرن کی گیند پر ایل بی ڈبلیو آﺅٹ ہوئے،شاہین آفریدی 7رنز بنا کر آﺅٹ ہوئے،حسن علی نے 1چوکے اور2چھکوں کی مدد سے 18رنز بنا کر ٹیم کا سکور 358رنز تک پہنچایا ۔
اس سے قبل انگلینڈ نے تیسرے ایک روزہ میچ میں ٹاس جیت کر پاکستان کو بیٹنگ کی دعوت دی ۔پاکستانی ٹیم میں ایک تبدیلی کی گئی ، جنید خان کو یاسر شاہ کی جگہ میچ میں کھلایا گیا جبکہ فاسٹ باﺅلر محمد حسنین کو اب تک سیریز میں موقع نہیں دیا گیا ہے۔ٹاس کے بعد سرفراز احمد نے اعتراف کیا کہ اگر ہم بھی ٹاس جیتے تو پہلے فیلڈنگ کرتے،ٹیم کو بیٹنگ اور بولنگ کے معاملے پر مزید توجہ دینے کی ضرورت ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ شاداب خان انشاءاللہ ورلڈ کپ ٹیم میں واپس آئیں گے،عامر کے بارے میں یقین سے نہیں کہہ سکتے،پہلے انہیں چکن پاکس سے نجات پانی چاہیے۔انگلینڈ کی طرف سے جیسن روئے، جونی بریسٹو، جو روٹ،بین سٹوکس، معین علی، این مارگن، جوڈینلی، کرس ووکس، ڈیوڈ ویلی، ٹوم کرن اور لیام پلنکٹ میدان میں اتر رہے ہیں۔پاکستانی فائنل الیون فخر زمان،امام الحق،بابر اعظم، حارث سہیل، سرفراز احمد، آصف علی، عماد وسیم،فہیم اشرف، حسن علی، جنید خان اور شاہین شاہ آفریدی پر مشتمل ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے